اطلاعات/معلومات

قیامت کی نشانیاں

قیامت کی نشانیاں 

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ ایسے لوگ حکمران ہوں گے جو نہ اہل اورجاہل اور حق کی نافرمانی کرنے والے ہوں۔

نوکرانی یا بیٹی اپنی مالکان یا ماں سے خدمت طلب کرے گی ۔

انسان اپنی بیوی اور دوست کے لیے ماں باپ کو ناراض کرے گا ۔

انسان اپنی بلند اور عظیم عمارتوں پر فخر کریں گے اور انہیں مختلف ڈیزائن دیں گے ۔

شراب کا استعمال عام ہو جائے گا لوگ شرابی مشروبات کو مختلف نام نہ دے کر استعمال کریں گے ۔

بے حیا عورتیں اور موسیقی کے آلات زیادہ ہو جائیں گے۔

جہالت عام ہو جائے گی لوگ دنیاوی تعلیم یافتہ ہوں گے مگر دینی علوم کا انہیں پتہ نہیں ہوگا۔

زنا آسان اور زنا کے اسباب زیادہ ہو جائیں گے۔

عورتیں کپڑے پہن کر بھی ننگی ہوگی یعنی ان کے کپڑے اتنے تنگ اور بریک ہوں گےکہ ان کا جسم نظر آ رہا ہوں گا۔

لوگ زکوۃ کے حقدار نہیں ہوں گے مگر زکوۃ کی طلب کریں گے ۔

عرب کی زمین پر فراخی آئے گی اور مدینہ منورہ کی آبادی زیادہ ہو جائے گی ۔

مسلمان ہر کام میں کفار کی تابعداری اور پیروی کریں گے ۔

زمانے میں برکت ختم ہوجائےگی سال مہینوں جیسے مہینے دنوں جیسے اور دن گھنٹوں جیسے ہو جائیں گے۔

رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم نے فرمایا کہ میری امت تکبر کرنا شروع کر دے گی۔

دنیا کے مالدار لوگ بخیل ہو گے۔

دین پر عمل کرنا ایسا  ہوگا جیسے ہاتھ میں آگ کا شعلہ پکڑے ہو۔

گناہ کرنا آسان ہوگا اور گناہ کو گناہ نہیں سمجھا جائے گا ۔

قتل و غارت عام ہوجائے گی ہر آنے والا زمانہ  گزرے زمانے سے بدتر ہوگا

لوگ چھوٹے ہونگے اور جھوٹی گواہیاں دیا کریں گے۔

لوگ امیر ہوں گے مگر دیندار نہیں ہوں گے۔

مرد کم اور عورتیں زیادہ ہو جائیں گی۔

Leave a Comment

Translate »